نصیبو لعل کو گالیاں


بات ہو رہی تھی فحاشی کی اور ایک نوعمر لڑکا بہت شدت سے وینا ملک اور نصیبو لعل کو گالیاں بک رہا تھا۔

لڑکا:        نصیبو لعل نے بیڑہ غرق کر دیا ہے …نہ کوئی حیا نہ شرم… اس کے گانے تو میں اپنے بھائی کے ساتھ بیٹھ کر نہیں سن سکتا ، ماں بہن تو دور کی بات …اس کی ماں کی ….

لالاجی:      ایک منٹ بچے…ایک منٹ… یہ جو گالی تم بکنے جا رہے ہو یہ تم اپنی ماں بہن کے پاس بیٹھ کر دے سکتے ہو؟

لڑکا:        (جھینپ کر ) نہیں

لالاجی:      دیکھو ابھی تم بچے ہو …اپنی توانائیاں لکھنے پڑھنے، سوچنے سمجھنے اور سیکھنے میں لگاؤ… یہ گالی گلوچ سے کیا حاصل

لڑکا:        گالی گلوچ …. میرا بس نہیں چلتا ورنہ میں اس کی ….

لالاجی:      بس بس … اچھا چلو مجھے یہ بتاؤ کہ نصیبو لعل کو یہ گانے کون لکھ کے دیتا ہے ؟؟؟

لڑکا:        مجھے کیا پتہ….

لالاجی:      تو پتہ کرو نا… ویسے کوئی نہ کوئی مرد ہی لکھ کر دیتا ہوگا نا…

لڑکا:        ہاں جی… شاید خواجہ پرویز

لالاجی:      اور دھنیں کون بناتا ہے؟

لڑکا:        وہ بھی مر دہی بناتا ہے… کچھ تو طافو کی بنائی ہوئی دھنیں ہیں

لالاجی:      اور ان گانوں کی جو ویڈیوز بنتی ہیں وہ کون تیار کرتا ہے…کیمرہ مین کون ہوتا ہے، ڈائریکٹر کون ہوتا ہے، پروڈیوسر کون ہوتا ہے

لڑکا:        سارے مرد ہی ہوتے ہیں جی، ہمارے ملک میں یہ کام عورتیں نہیں کرسکتی

لالاجی:      عورتیں کر تو سکتی ہیں اور ہمارے ملک میں بھی کرتی ہیں مگر جن گانوں پر تمہیں شدید اعتراض ہے ان کے ویڈیوز مرد ہی بناتے ہیں

لڑکا:        جی ایسا ہی ہے …ان کے نام لکھے ہوتے ہیں ویڈیوز میں … سب کے ناموں کے ساتھ حاجی ضرور لکھا ہوتا ہے

لالاجی:      تو پھر تمہاری ساری گالیاں نصیبو لعل کے لئے کیوں ہیں…؟ ان سارے مردوں پر تمہیں اتنا غصہ کیوں نہیں آتا؟ ان سارے مردوں کے تو تم نام بھی نہیں جانتے ہوگ شکلیں تو دور کی بات

لڑکا:        …………………………………………………(طویل خاموشی )