تبلیغ میں کیا خرابی ہے؟

تبلیغی جماعت

تبلیغ پر نکلے ہوئے کچھ لوگ

ہر سال لاکھوں کی تعداد میں لوگ تبلیغی اجتماعات میں شرکت کرتے ہیں ؛ پھر یہ لاکھوں لوگ پورے ملک میں پھیل جاتے ہیں اور نیکی کی تلقین کرتے ہیں۔ گزشتہ پچیس سے تیس برسوں میں یہ تعداد چند ہزار سے بڑھ کر بیس لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے مگر …..

جی ہاں یہ ایک بہت بڑا مگر ہے۔ مگر  پچھلے پچیس، تیس سال میں تبلیغ کے رجحان میں جتنا اضافہ ہوا ہے ، اُتنا ہی پاکستان میں ظلم، جبر ، بے انصافی اور بدعنوانی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ ایسا کیوں ہے؟ اس کا جواب تبلیغ کرنے والوں کے پاس بھی نہیں ہے۔ (ماسوا اس کے کہ اس کی وجہ  بھی امریکہ اور اسرائیل کی سازش میں تلاش کی جائے)۔

مجھے اُ ن کی تبلیغ میں بنیادی خرابی یہ نظر آتی ہے کہ اُن کا سار زور عبادات کی تلقین پر ہوتا ہے ۔ مسائل کا سامنا کرنے کی بجائے اُن کے پاس ہر مسئلے کا ایک ہی آسان سا جواب ہے :” دین سے دوری” ۔ اور دین سے اُن کی مراد دو،تین باتیں ہیں: نماز پڑھنا، قرآن کی تلاوت کرنا، داڑھی رکھنا، شلوار ٹخنوں سے اوپر باندھنا وغیرہ۔ (یہاں یہ سوال بھی اُٹھتا ہے کہ مغربی ممالک میں دین سے دوری کے باوجود اتنی رشوت ستانی کیوں نہیں، وہاں یتیموں اور بیواؤں اور غریبوں کی جائیدادوں پر لوگ قبضے کیوں نہیں کرتے؟)

یہ لوگ عام سیدھے سادے آدمی کو پکڑ کر ان ساری ظاہری چیزوں اور عبادات کے بارے  میں تو پڑھا/بتا دیں گے مگر جو لوگ معاشرے میں خرابیاں پھیلا رہے ہیں اُن کے پاس جا کرکوئی تبلیغ نہیں کریں گے۔یہ کبھی کسی ایسے شخص کے پاس وفد لے کر نہیں جائیں گے جس نے کسی یتیم کی جائیداد پر ناجائز قبضہ کر رکھا ہو، نہ کبھی کسی ایسے افسر کے پاس جائیں گے جو بدعنوانی میں ملوث ہو ، یا کسی ایسے شخص کے پاس نہیں جائیں گے جو علاقے میں منشیات کا کاروبار کر رہا ہے۔ پتہ نہیں ایسے سماج دشمن عناصر کو تبلیغ کرنے کی ہمت نہیں یا ضرورت ہی نہیں محسوس کی جاتی۔

لیکن اس سے زیادہ اہم بات  یہ ہے کہ یہ لوگ عام آدمی کو "خصی” بنا دیتے ہیں یعنی اُسے ایسا کر دیتےہیں کہ وہ ملک و قوم کے کسی کام کا نہیں رہتا۔ ہر بندے کے  ہاتھ میں تسبیح دے کر مسجد میں بٹھا دیتے ہیں ۔ اِس دنیا میں جو کچھ ہو رہا ہے اُس کو چھوڑو، آخرت کی فکر کرو۔  بھائی کیا ایسا نہیں ہو سکتا کہ میری یہ دنیا بھی سنور جائے اور آخرت بھی۔ کیا مذہب ہمیں اس دنیا میں ہونے والے ظلم و جبر سے آنکھیں بند کر لینا سکھاتا ہے۔ اگرنہیں تو اس ملک میں روزانہ کی بنیادوں پر ہونے والی قتل و غارت کے خلاف یہ لاکھوں تبلیغیوں نے کیا کیا (شائد بیس بیس لاکھ کے اجتماعات میں رقت انگیز لہجے میں خدا سے دعائیں کی ہوں، مگر کوئی انہیں بتائے کے معاشرے دعاؤں سے نہیں سدھرتےو رنہ حضرت محمدﷺ بھی غار ِ حرا میں بیٹھ کر دعائیں کرتے رہتے ، وہاں سے نیچے آنے کی کیا ضرورت تھی)۔

تبلیغ نے دراصل عام آدمی کو اپنی دنیاوی ذمہ داریوں سے غافل کر کے اس ملک و قوم کا بیڑہ غرق کر دیا ہےمگر تبلیغیوں کو اپنی تبلیغ میں موجود یہ کھُلا تضاد نظر ہی نہیں آتا۔ یہ لوگ ہر کسی کو اپنے ساتھ تبلیغ پر لے جانے پر بضد ہوتے ہیں۔ خود تو اپنی ذمہ داریوں سے فرار اختیار کرتے ہی ہیں، دوسروں کو بھی اس پر مجبور کرتے ہیں۔سوال یہ ہے کہ اگر کوئی شخص اپنا گھر بار، بیوی بچے چھوڑ کر سال بھر، تین ماہ یا چالیس روز کے لئے دوسروں کو سیدھا راستہ دکھانے نکل پڑےاور پیچھے اپنے ہی گھر والے بھٹک جائیں تو آپ نے کیا تیر مارا۔ بیوی بیمار بچے کو لے کرکہاں ماری ماری پھرے گی جسے پتہ ہی نہیں کہ اپنے ہی شہر کا ہسپتال کدھر ہے اور جسے آپ مرد ڈاکٹر سے ملنے بھی نہیں دیتے کہ وہ نامحرم ہے۔ یہ بات کون سمجھے گا اور سمجھائے گا کہ جس شخص پر چار پانچ لاکھ روپے قرضہ ہو وہ اپنی دکان بند کر کے یا نوکری چھوڑ کر تبلیغ پر نہ نکلے بلکہ پہلے اپنی ذمہ داریاں پوری کرے، پھر دوسروں کی اصلاح کرے۔

انضمام الحق اپنے آخری میچ میں آؤٹ ہو کر روتے ہوئے پویلین واپس جا رہے ہیں۔

یہی صورت حال ہم نے پاکستان کرکٹ ٹیم میں دیکھی۔ جوں جوں کرکٹ ٹیم میں تبلیغ کا رجحان بڑھتا گیا اُن کی کاکردگی کا معیار گرتا چلا گیا۔ کھلاڑیوں نے اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داری یعنی کرکٹ کھیلنا (جس کے لئے وہ بھاری فیسیں وصول کرتے ہیں) چھوڑ کر تبلیغ شروع کر دی۔ چنانچہ ہمارے ایک سٹار بیٹسمین انضمام الحق کو ویسٹ انڈیز میں ہونے والے عالمی  کپ میں ایک چھوٹی سی ٹیم سے شکست کے بعد روتے ہوئے میدان چھوڑ کر اسٹیڈیم سے باہر آنا پڑا۔کوئی بتائے کہ کھلاڑی کرکٹ کھیلنے کی غرض سے ویسٹ انڈیز گئے تھے، وہاں جا کر لوگوں کو مسلمان کرنا شروع کر دیا اور کرکٹ کو بھول گئے تواُن کی فیسیں، ٹکٹ اور ویسٹ انڈیز میں قیام پر اٹھنے والے سارے اخراجات حرام نہیں ہوگئے۔ مگر اس ملک میں لوگ حج بھی قوم کے خرچے پر کرتے ہیں، تبلیغ بھی قوم کے خرچے پر۔ قوم کا پیسہ مولوی کے لئے بھی اُتنا ہی حلال ہے جتنا فوجی جرنیل، بیوروکریٹ، جاگیردار، سرمایہ دار اور تاجر کے لئے ہے۔ کوئی قوم کے پیسے سے اِس دنیاء میں پلاٹ خریدتا ہے کوئی قوم کے پیسے سے جنت میں مکان بُک کرا لیتا ہے۔

تبلیغیوں سے آخر پر یہی التجاء کروں گا کہ آپ اپنی تمام تر ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے معاشرے میں موجود ناانصافیوں کے خلاف منظم انداز میں جدوجہد کریں ۔ اس سے بڑھ کر نہ تو آپ دین کی کوئی خدمت کر سکتے ہیں اور نہ ہی اس بڑھ کر کوئی اللہ کی عبادت ہو سکتی ہے۔ ورنہ خاموشی سے مسجد کے کسی کونے میں بیٹھ کر تسبیح گھما گھما کر اپنی جنت پکی کرتے رہیں اور باقی لوگوں کو "خصی” نہ کریں، انہیں معاشرے میں اپنا کردار ادا کر نے دیں۔

Advertisements

27 خیالات “تبلیغ میں کیا خرابی ہے؟” پہ

  1. Ap jo koi b ho mein apko nahe janta mere khayal mein apko ko khud ye kalam likhne se pehle deen seekhna chaheh tha, kuch batien to ksi had tk darust hehn par kusch se ALLAH se doori ke nazeer milte heh.Is kalam ka bara hisa gile guzaron pe mushtamil heh jo har bnda apne ap ko judge kea bger doosro ko sikhnae ke koshish krta nazar ah rha heh.mere bhai is mazmoon se to ye sabit krne ke koshish ke ja rhe heh k vo sahabi jin ke mehnat se ham musalama hue jino ne dunia k kone kone tk Islam ponchaya goya wo majnoon theh .bare afsos ke baat heh.ap kehte ho tableeg aam admi ko khasi bana deti heh goya NAOZOBILLAH din par amal krna dunia mein nakami ka sabab heh. muje to lgta heh apko foran tooba kr k dobara KALMA parhna chaheh.Akhir mein bs itna kehna chahun ga kbi betho ALLAH valo ke mehfil mein kbi chalo tablleg valo k sath khud dekho vo kia kehte kia krte hehn us ke baad mazmmon likho mein vo parhna chahun ga.

  2. مضمون نگار نے بخل اور کرورت کا مظاہرہ کیا ہے اس مضمون کو رقم کرتے وقت۔
    مضمون دوبارہ پڑھا ۔۔۔ مجھے اس مضمون کہیں بھی کوئی تحقیقی بات ، کوئی علمی دلیل، کوئی معقول تجزیہ، کسی قسم کی حقییقت بالکل نظر نہیں اتئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مغالطوں سے بھرا ایک مضمون ۔ ہر ہر جملہ ہی قابل دلیل ہے۔

  3. Well done Lala gi. You have written the truth. This is what tablighi jamat does make masses ineffective for the society. I personally know some households that have been destroed as husband went on two months tour. To above commentators, when someone speaks the truth, please accept it and don’t hide behind the religion and give ref. for not accepting the truth.

  4. What I can say about you LALA JI. You are such a person who even didnt show his identity But identifying the problems in tableghee Jumaat. I am an Organizational Psychologist and a small level researcher as well. I have doubts about your ideological attachment to any specific school of thought. Neither had you known your epistemological, ontological standings nor your axiology. As the language you used in your blog is not as per the standards. Your blog is full of logical fallacies. I have been in Tablehee Jumaat, and still attached to it. But rather making me useless ( as you claimed), it made me more productive. I have my masters with distinction and MS with a Gold Medal from an Institute of repute in Pakistan. I am doing continuous research about different organizational phenomena. I have been published in research journals and have presented at reputed research conferences. People like you who have a bias towards religion are just propagating; you did not come with arguments. You label your desires as reality. I request you to come with evidence / empirical support for your claims you have made in this blog else leave it to the masses/ intelligentsia to decide about liking/ disliking the Tableghe Jumaat…
    Its Muhammad Riaz Khan
    You can reach me at riaz@hdo.org.pk

  5. دانش صاحب! آپ کچھ بھی کہ سکتے ہیں۔ میرا لکھا کسی مولوی کا فرمایا تو ہے نہیں کہ جس سے اختلاف نہ کیا جا سکتا ہو۔ میں مختلف سوچ رکھنے والوں کو قتل بھی نہیں کرتا، کافر بھی نہیں کہتا، پاگل بھی نہیں قرار دیتا۔ میرا نفسیاتی تجزیہ کرانے کا شکریہ، کسی ماہر نفسیات سے رجوع کروں گا۔ شاید افاقہ ہو جائے۔

  6. Dear lala Ji. Neither I declare you Insane/Non Believer nor do I issue the decree about your execution. I try to make the point that don’t label your inner desires as REALITY rather I emphasizes that you must use a language deemed suit an intellectual and argumentation with evidence. I did not do your psychoanalysis rather I asked about your ideological standings. My request is .again the same; during writing a blog please use the neutral language and argue with evidences / research…..

  7. Hahahaha…. yar muje to admin per hasi aarahi hai k woh to Allah ko jante hi nahi hai har kar saz to Allah ki pak zaat hai nake paise, na awlad sahaba ne apni nayee nawali dulhane chori hain deen k lye or phir kabhi wapas nahi aye Ager Allah ko razi kar lya jai to konsa kam mushkil he dunia main. So jab Ibrahim A.S ne apni biwi or bache ko sehra main chora tha or khud chale gaye the to woh farar tha kya yah Allah ki raza thi is main. Allah tumhain hidayat de admin

  8. لالہ جی کسی سے اختلاف رکھنا فظری چیز ہے مگر کسی چہز کو جانے بغیر برا کہنا نامناسب ہے ۔ میں عقیدت سے ہی نہیں بصیرت سے یہ کہہ رہا ہوں کہ کبھی دل صاف رکھتے ہوئے رائیونڈ جاءو ۔ پھر واپس آکر بتانا 🙂 ۔ اس نے اپنا بنا کہ چھوڑ دیا ۔۔۔۔۔۔۔ کیا اسیری ہے کیا رہائی ہے

    کوئی نا بالغ ، بلوغت کی باتوں کو کیسے سمجھ سکتا ہے (بلوغت ذہنی کی بات ہورہی ہے ) ۔ 🙂

  9. mere kitne aziz or dost apni zindagi ko kharab kerke ulti side herket kia kerte te us mai kuch aise te jo rozana zana sharab charas or pta nai kia kia kerte te yaqeen kijye mai khud apni baat kerta hun mai b begra hua ta meger aik din mujeh tableghe jamat wale mil gaya or mujeh or mere dost ko sath legaye aaj ALLAH ka karam hum dono panch wakt ki namaz maa baap ki izat reshtedaro ke hukkok or bohat kuch jo humain nahi ata ta wo jan gaye plz aise shaitan sifat logo ki na sune jo deen se door kerne ki baat kerte hai ye log khud to dunya ki rangeneo main ghoom hojate hai balke dusro ko b ghalat raste per laker kare kerdete hain jo ke kufar ka rasta hai aise logo per ALLAH ki lanat hai ye kam aisa hai jo nabio ne kia hai or es ko age leker jana hamara farz hai yah ALLAH ne nabi ke zariye hum sub ko bataya zindagi main deen nai to kuch b nai hai main to bus itna kahun ga ke aapne aap ko jahnum raseed kero ya janat faisla aap ke hath mai hai

  10. Jahilo ki soch aisi hi hoti hai…. It means that Tableeghi hazrat hi sari burayon ke lye responsible hai.. 30 years ago, the literacy rate in Pakistan was very poor, there were countable number of PhD and a limited number of scientists and engineer…. Now, The number of PhDs are in many many thousands, the engineers and doctors and in such an exess that a great number of them are jobless… But inspite of higher level of literacy, there are suicide attacks, bomb blasts, target killings, kindnapping is common and an increasing number of rapes and gang rape cases… It means, lliteracy has adversely affected our society. So, leave the schools, colleges and university and lets restore the same status as was 30 years ago, we will get more civillized and peaceful… I strongly believe that the author of the topic and his supporters will strongly agree with me 🙂

  11. LALA JI KA KALAM SAHI HAI KYUN K TABLAGAY HAZRAT MAY ELAM KI KAMI HAI AOR IN K JO KINE CHONAY ULOMA HAI YE INKO BUS 3ROZA 40DIN ETC KA BARAY MAY KEHTE HAI AOR DUNIYA K MUTABIQ NAHI BATA TAY K BHAI DUNIYA WALON K SATH KISA SALOG KARNA HAI MAY NAY AJJ TAK JETNAY B TABLAGAY HAZRAT DEKAY HAI IN MAY BUHAT SARI KAMYA HOTI HAI KOI ACHA BAAP NAHI HO KOI ACHA DOST NAI HOTA KOI ACHAY RISTE NAI PAL SAKTA BAL K AP KHUD IS KI KHUJ KARIN PATA CHAL JAYE GA BUS KYA BATAO BUS APNAI KAMI KO CHUPANAY K LY DIN KA SAHARA LY LETAI HAI AOR APNAY AP KO MUFTI AZAM BANA LATAY HAI AGAR BHAI DIN SE ITNA HI SHOQ HAI TU KISE MADRASE MAY DEKHILA LY LO PIR PATA CHAL JAYE GA K 3 DIN AOR 40 DIN MAY KOI ALIM NAI BANTA LYKIN KON SAMJAYE INKO ALLAH INKO KHIDAYAT NASEEB KARIN AMMMIN

  12. تبلیغ سے مراد ہے "پہنچانا” اللہ اور رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے پیغام کو لوگوں تک پہنچانا، اسلام کی تعلیمات صحیحہ کو دوسروں تک پہنچانا، اور دین اسلام کی تعلیمات کا صحیح مفہوم لوگوں تک پہنچانا تبلیغ ہے۔ قرآن مجید میں اللہ تعالی نے ارشاد فرمایا :

    يَا أَيُّهَا الرَّسُولُ بَلِّغْ مَا أُنزِلَ إِلَيْكَ مِن رَّبِّكَ

    (الْمَآئِدَة ، 5 : 67)

    اے (برگزیدہ) رسول! جو کچھ آپ کی طرف آپ کے رب کی جانب سے نازل کیا گیا ہے (وہ سارا لوگوں کو) پہنچا دیجئے،

    تبلیغ کرنا انبیاء کا طریق اور سنت ہے۔ تبلیغ میں وقت لگانا فرض کفایہ ہے اور اس کام کے کرنا کا اجر وثواب ملتا ہے۔

    ایک اور مقام پر ارشاد فرمایا:

    وَمَا كَانَ الْمُؤْمِنُونَ لِيَنفِرُواْ كَآفَّةً فَلَوْلاَ نَفَرَ مِن كُلِّ فِرْقَةٍ مِّنْهُمْ طَآئِفَةٌ لِّيَتَفَقَّهُواْ فِي الدِّينِ وَلِيُنذِرُواْ قَوْمَهُمْ إِذَا رَجَعُواْ إِلَيْهِمْ لَعَلَّهُمْ يَحْذَرُونَo

    التوبة، 9 : 122

    اور یہ تو ہو نہیں سکتا کہ سارے کے سارے مسلمان (ایک ساتھ) نکل کھڑے ہوں، تو ان میں سے ہر ایک گروہ (یا قبیلہ) کی ایک جماعت کیوں نہ نکلے کہ وہ لوگ دین میں تفقہ (یعنی خوب فہم و بصیرت) حاصل کریں اور وہ اپنی قوم کو ڈرائیں جب وہ ان کی طرف پلٹ کر آئیں تاکہ وہ (گناہوں اور نافرمانی کی زندگی سے) بچیںo

    • kisi ke jhoota hone ke liye itna kafi hy ki wo aadhi baat kare . . . . aap ne anmbiya (PROPHETs) ki baat ki hy ki Tableegh kerna unki sunnat hy, toh ye 50% baat ki apne . . . .baqi 50% ye hy ki en PROPPHETs ne es tableegh ke saath apne tamaam duniyavi (WORLDLY) zimadariya bhi puri keen, or ye ki es tableegh se pehle 40 saal tak SADIQ or AMEEN ka title bhi hasil kia or phir jab SOCIETY par ye sabit hogaya ki ye PROPHET apne qoal or fail (words and actions) mei saccha hy toh phir us ke baad unhun ne tableeg start ki . . . . aap muje ye batao 1.5 billion musalmanu mei kitney SADIQ or AMEEN hain or kitney 40 years se upar ki age ke hain ?

  13. I have been part of Tableeghi Jamaat for many years and I agree with most of the things stated in the article. The responses are disappointing. According to recently declassified CIA and MI6 documents ,Tableeghi Jamat was raised in 1920s by the manouvers of Birtish government in order to de-politicise the middle and lower middle classes in sub-continent. This was done to deflect the attention of the masses form the rising wave of communism all over the world to the medieval basis of religion. Lala ji lgoun ko khassi ka lafz bht bura laga hy haqeeqat yehi hy. Tableeghi Jamat mein ese log kafi zyada pae jaty hyn jo zindagi bhar sarkari posts par beth kr qoum ko loot’ty rhe, authority ka ghalt istemal karty rhe aur jab retire hony k bad ghar mn in ki koi nhe sunta to ye logun pe hukm chlaney aur un ki ghaltiyan nikalny k liye tableeghi jamat mein a jaty hyn. Ye ghareebun ko kehty hyn k tum mn falan khrabi hy, deen se door ho, tumhary sath bura isliye ho rha hy kiun k tm namaz nahin parhty . Thnaney ka SHO, University ka VC, gaun ka jageerdar, tumhari company ka malik tum se insaf kre ga agar tum masjid mn beth k duaen karty rho. Jab k Quran e Majeed mn wazen likha hy k "ey insan tum ko kuch nahin mily ga hatta k tum iski koshish na kro”. Tableeghi jamat bht achi jamat ban sakti thi agar ye logun ko sath syasi shaur bhi deti k dolat ki gher munsifana taqseem k khilaf tum ne logun mn agehi peda karni hy, kamzorun k haq mn awaz buland karni hy aur sarmaydar tabqey ko majboor krna hy k wo Allah ki di hui dolat ko taqseem kre. Magr is ki tojeeh ye log ye pesh karty hyn k Allah ne huzur ki tableegh ki sunnat ko hmarey zriye zinda rakha hua hy. jJab k Nabi SAWW ki zindagi ek jameh zindagi hy. unhun ne apni fojun ko taqat deny k lie sham se aney waley qafilun pr 952 hamly kiye takey maal e ghaneemat jama ho aur hmen saman e jung muhayya ho. Unhun taqatwarun k khilaf awaz bukand ki aur muashrey mn zulm k khilaf awaz buland ki, Hatta k tamam Anbia e Kiram ki yehi jiddojohd thi. Hazrat Eesa AS ko sooli pe kiun latkaya gya? Sirf isliye k unhun ne us waqt k Badshahun aur mazhabi padriun ki loot mar aur doalat jama karny ki muzammat ki thi. JAb k tableeghi jamat k to is mulk k hukmran tabqat se bht gehrey marasim hyn. London plan waley aaur Raiwind waley in k har ijtema pe jaty hyn aur unki haqeeqat se kon nhe waqif? Unki factories k managers tableeghi hyn. Ye to ese hi hy k ap sara hfta gunah kro, logun ko looto, apney waderron ko bhi haram maal bna k do, mazdoorun ka istehsal kro aur shab e juma pe ja millions of tons of sawab hasil kro aur un sab buraiyun ko outnumber kr do. AAm Tableeghi Masoom aur dil ka sacha hy, lagan se kam karta hy magar in k barun ki niyatun mein khot hy. Riyasat aur establishment ko inse koi khatra nahin isiliye ye musalsal barhty ja rhe hyn wagarna ye reyasat ksi b khatry ko barhny nhe deti. Mein matric se lekar univesirty k 3 saal tk in k sath jata rha aur meri calculation in k barey mn yehi hy. AUr jo mn ne apni ankhun se dekha hy us pr kese naa yaqeen krun. UET Taxila mein kya ho rha hy? Zara tableeghi bhai btaen na k wahan grades kese milty hyn? Mere khandan ne sari sari umren di hyn is Tableeghi jamat ko aur hum se zyada in ki haqeeqat kon jan sakta hy. Ap sada loh insanun ko to bevkoof bna sakty hyn, truck ki batti k peechy lga sakty hyn. Magar khuda ne aj bhi nsanun pr hidayat k rastey band nhe kiye. Sab se zyada afsos to mujhy research waley bhai pe hua k wo zara Tableeghi Jamat pe b research kr lety. Itni bari degreas ka kya faida k jab k is ne ap k zehnun par qufl lga diye. Molana Ubaid Ullah Sindi, Hussain Ahmed Madni, Molana Azad to ap hi k AKabireen thy. Unki kya struggle thi, sari umren Jailun mn guzar gyin Beitsh Samraj k khilaf larty larty aur ap log kin rahun pe chal parey ho. Kabi unki kitaben bhi khol lo agar research mein ap ne itni brilliance hasil ki hy k ap international seminars mn bolty ho. Bilashuba Pakistan k Deoband ne (Including TTP, Tablighi Jamat, Jamt e Ehl e Sunnat wal Jamat, Lashkar e Jhangvi, JUI aur Taqi Usmani group) apney Akabir aur Anbia AS k mission se ghaddari ki hy. Ap kis ko dobara KALMA parhny ko keh rhe ho, apny garebanun mn bhi jhank lo zara. Hamarey Akabir ki hargiz ye jiddojohd nhe thi k logun ko syasi masael se door kar do. Jis Muslim Leagi Jageerdar tabqey k shetani iradun ko bhanp kr unhun ne taqseem e Hind ki mukhalifat ki thi, ap ne usi jageerdaar sarmayadar tabqey se hath mila liye? Sharam ani chahye ap logun ko. dfd

  14. writer sahib.. Do istighfar from Allah for what have u just wrote down..Do u have any knowledge of religion?wt a shame that the religiously illetrate and ignorant ppl like u are just destroying ur aakhira just because of ur such stupid thinking.

جواب دیں

Please log in using one of these methods to post your comment:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s